ہفتہ 26 نومبر 2022 - 5:08:32 شام

ابوظہبی مسلسل تیسرےسال جیو۔جِتسوورلڈچیمپئن شپ کے27ویں ایڈیشن کی میزبانی کریگا


ابوظبی، 16 ستمبر، 2022 (وام)۔۔ ابوظہبی مسلسل تیسرے سال اگلے ماہ جیو۔جِتسو ورلڈ چیمپئن شپ کے 27 ویں ایڈیشن کے لیے 70 سے زائد ممالک کے تقریباَََ 2,000 مرد اور خواتین کھلاڑیوں کی میزبانی کرے گا۔ کھیل کے عالمی ادارے جیو ۔جتسوانٹرنیشنل فیڈریشن (جے جے آئی ایف) کے زیر اہتمام اور جیوجتسو متحدہ عرب امارات فیڈریشن (UAEJJF) کی میزبانی میں یہ ایونٹ 29 اکتوبر سے 8 نومبر تک زاید اسپورٹس سٹی کےجیو-جِتسو ایرینا میں چلے گا۔ ۔ مختلف عمر کے گروپوں میں دنیا کے بہترین کھلاڑیوں کے ساتھ 11 روزہ ایونٹ میں ہر عمر کے مرد اور خواتین اپنی صلاحیتوں کا بھرپور مظاہرہ کریں گے۔ UAEJJF کے وائس چیئرمین محمد سالم الظہری نے کہا جے جے آئی ایف کا ہمیں ایک بار پھر اس باوقار عالمی ایونٹ کی ذمہ داری سونپنے کا فیصلہ ابوظہبی کی کھیلوں کے مقابلوں کی کامیابی سے میزبانی کرنے کی صلاحیتوں پر ان کے غیر متزلزل اعتماد کو ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عالمی فیڈریشن امارت کو سب سے اہم ٹورنامنٹس کی منصوبہ بندی اور انعقاد کے لیے ایک ماڈل پلیٹ فارم کے طور پر دیکھتی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ یہ حقیقت کہ یہ شہر مسلسل تیسرے ایڈیشن کے لیے جیوجتسوعالمی چیمپئن شپ کی میزبانی کرے گا نہ صرف عالمی اعتماد بلکہ گزشتہ ایڈیشن کی کامیابی کو بھی ظاہر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات اور ابوظہبی عالمی سطح پر جیو جتسوکی ترقی کے لیے اہم ہیں اور ہم اس کھیل کو مزید فروغ دینے کے لیے بین الاقوامی اداروں کی حوصلہ افزائی کے لیے مسلسل کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایشیائی اور بین الاقوامی جیو جتسوفیڈریشن دونوں کے ہیڈکوارٹر کے طور پر ہم دیگر فیڈریشنوں کے ساتھ بھی تعاون بہتر بنانے کی کوشش کرتے ہیں۔ الظہیر ی نے کہا کہ 70 سے زائد ممالک سے کھلاڑیوں کے ابوظہبی پہنچنے کی توقع ہے۔متحدہ عرب امارات کی قومی ٹیم نے پہلے ہی اپنی تیاری شروع کر دی ہے۔ ہمارے ایتھلیٹس اپنے چیمپئن شپ ٹائٹل کا دفاع کرنے اور اپنی پچھلی کامیابیوں خاص طور پر ورلڈ گیمز میں ان کی حالیہ کارکردگی جہاں انہوں نے پانچ تمغے جیتے ہیں کو آگے بڑھانے کے لیے پرعزم ہیں۔ UAEJJF نے حال ہی میں قومی ٹیم کے لیے پلان کی منظوری دی ہے جس میں اندرونی اور بیرونی تیاری کے کیمپ بھی شامل ہیں۔ مردوں کے اسکواڈ میں فیصل الکتبی، عمر الفضلی، محمد العماری، محمد السویدی، مہدی العولقی، خالد الشحی اور دیاب النعیمی شامل ہیں۔ حمدہ الشکیلی، بلقیس الہاشمی، شمع الکلبانی، بشیر المطروشی، میرا السعدی، آمنہ الحسانی، زمزم الحمادی اور ماہرہ محفوظ جیسی خواتین کھلاڑی مضبوط خواتین ٹیم کی نمائندگی کریں گی۔ متحدہ عرب امارات کی قومی ٹیم نے پچھلے سال کے جے جے ڈبلیو سی میں فاتح کا اعزاز برقرار رکھا۔ ملک نے مجموعی طور پر 53 تمغے جیتے جن میں 18 طلائی، 16 چاندی اور 19 کانسی کے تمغے شامل ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395303084076

WAM/Urdu