ادنوک ایل این جی کا 2022 کی پہلی سہہ ماہی تک کے آرڈرز کیلئے بی پی اور ٹوٹل کے ساتھ معاہدہ


ابوظہبی ، 12 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ ابوظہبی نیشنل آئل کمپنی کی زیرانتظام کمپنی ادنوک ایل این جی نے 2022 کی پہلی سہہ ماہی تک کیلئے اپنی اکثریتی ایل این جی پیداوار کی بکنگ سے متعلق بی پی اور ٹوٹل اداروں کے ساتھ سپلائی معاہدہ کو انجام دینے کا اعلان کردیا – اس معاہدے پر ادنوک ایل این جی ، ٹوٹل اور بی پی کے حکام نے دستخط کئے ۔ اس موقع پر وزیر مملکت اور ادنوک گروپ کے سی ای او ڈاکٹر سلطان احمد الجابر ، بی پی کے گروپ سی ای او باب ڈڈلی اور ٹوٹل کے چیئرمین پیٹرک پویانے بھی موجود تھے – ادنوک ایل این جی کی سی ای او فاطمہ النوعیمی کا کہنا تھا کہ اس سپلائی معاہدے سے ادنوک ایل این جی نے اس امر کا اظہار کردیا ہے کہ وہ مارکیٹ کی کسی بھی بدلتی صورتحال کا سامنا کرنے کیلئے تیار ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ وہ فراہمی کے معیار کی سکیورٹی کو بھی یقینی بنائے گی ۔ انہوں نے کہاکہ ایل این جی کی مستحکم پیداواری استعداد کے تناظر میں نئی مارکیٹس کیلئے انکا ادارہ اپنےشراکت داروں کے تعاون سے کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ان تمام تر یقین دہانیوں کے ساتھ ساتھ ادنوک ایل این جی نے ایک صارف سے کئی صارفین کی جانب منتقل ہونے کی صلاحیت کا اظہار بھی کیا ہے – اپریل 2019 میں ادنوک ایل این جی کی مرتب کی گئی نئی حکمت عملی کے تحت صرف آٹھ ماہ بعد ہی اس ادارہ کی ایک اور کامیابی کا اظہار ہوا ہے ۔ اس نے 90 فیصد ایل این جی صرف ایک صارف جاپان کو دینے پر انحصار کے بعد اب اپنی 90 فیصد ایل این جی کو جنوبی اور جنوب مشرقی ایشیاء کے آٹھ ممالک جن میں بھارت ، چین ، جنوبی کوریا ، تائیوان بھی شامل ہیں کی جانب منتقل کردیا ہے – بی پی کے ذیلی ادارے گیس کے چیف آپریٹنگ آفیسر رابرٹ لاسن کا اس معاہدے پر مسرت کا اظہار کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کئی برس پر مبنی اس ڈیل کا انجام دینا قابل فخر پیشرفت ہے ۔ ٹوٹل کے نائب صدر لارنٹ شیویلئر نے بھی اس معاہدے کو بہت اہم قرار دیا – صنعتی جائزے کے مطابق ایل این جی اس وقت تیزی سے ترقی کرتا ہوا ایندھن ہے جسکی سالانہ شرح 4 فیصد تک بڑھ رہی ہے ، توقع ہے کہ 2035 تک اس کی عالمی طلب بڑھ کر 600 ملین ٹن سالانہ ہوجائے گی جوکہ 2017 میں 300 ملین ٹن تھی – ادنوک ایل این جی اپنے دو پیدواری مقامات سے 6 ملین ٹن سالانہ پیداوار کررہی ہے ، یہ عالمی سطح پر توانائی کی فراہمی میں 40 سالہ تجربہ رکھنے کے ساتھ مشرق وسطی میں ایل این جی برآمد کرنے والا پہلا ادارہ ہے – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302802037

WAM/Urdu