ادنون کی جی 42 کے ساتھ شراکت داری ، تیل و گیس پیداوار کیلئے مصنوعی ذہانت بنائی جائے گی


ابوظہبی ، 12 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ ابوظہبی نیشنل آئل کمپنی نے ابوظہبی میں قائم مصنوعی ذہانت ، کلاؤڈ اور سپر کمپیوٹنگ کی کمپنی گروپ 42 (جی42) کے ساتھ منگل کو معاہدہ کرنے کا اعلان کردیا جس کے تحت تیل و گیس کی تمام پیداوار کیلئے مارکیٹ لیڈںگ مصنوعی ذہانت کو تیار اور کمرشلائز کرنے کی خاطر جائینٹ وینچر کیا جائے گا – ادنوک کی پریس ریلیز کے مطابق اس معاہدے کے نتیجے میں ایک نئی کمپنی کا قیام عمل میں آئے گا جس کی قانونی حیثیت اور کام کرنے کا طریقہ کار بھی الگ سے ہونگے ۔ اس معاہدے پر دستخط کی تقریب ایڈیپک 2019 کے موقع پر ہوئے جس کے دوران ادنوک کے ڈائریکٹر عمر السویدی اور جی 42 کے سی ای او پنگ شیاؤ نے دستخط کئے ۔ اس موقع پر وزیر مملکت اور ادنوک گروپ کے سی ای او ڈاکٹر سلطان احمد الجابر بھی موجود تھے ۔ ڈاکٹر الجابر نے اس موقع پر اس معاہدے کو چوتھے صنعتی انقلاب کے تناظر میں اہم قرار دیا اور کہا کہ آنے والےکل کیلئے تیل اور گیس کے شعبے میں تخلیقی اقدامات اور جدت ایک بہت بڑا تقاضا بن چکا ہے ، اس حوالے سے ادنوک تمام جدید وسائل بروئے کار لانے کیلئے پرعزم ہے – معاہدے کے مطابق اس شراکت داری کے نتیجے میں ادنوک کو جی 42 کے نہایت جدید سنٹرل پروسیسنگ یونٹ سی پی یو ، گرافکس پروسیسنگ یونٹ ، عالمی معیار کے ڈیٹا سائنسدانوں ، سافٹ ویئر انجینئرز ، ڈومین ماہرین کی سہولیات حاصل ہونگیں ۔ اس کے نتیجے میں ادنوک کی 2030 کیلئے سمارٹ گروتھ کی حکمت عملی کا انجام دینے میں معاونت ملے گی – پنگ شیاؤ کا کہنا تھا کہ ادنوک کے ساتھ شراکت داری قابل فخر لمحہ ہے اور انکا ادارہ تیل اور گیس کے شعبے میں مصنوعی ذہانت پر مبنی جدید ترین تصورات اور اقدامات فراہم کرسکے گا – ادنوک کی پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ یہ ادارہ اپنے نظام میں مصنوعی ذہانت کے ساتھ ڈیٹا اینلیٹکس ، بلاک چین ، مشین لرننگ جیسی جدید ٹیکنالوجی کو فروغ دے رہا ہے – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302802084

WAM/Urdu