محکمہ ثقافت وسیاحت کا ابو ظبی کی تاریخی مساجد کے دوروں کااعلان


ابوظبی، 19 دسمبر ، 2019 (وام) ۔۔ محکمہ ثقافت و سیاحت ابو ظبی نے دارلحکومت کی اہم تاریخی مساجد کے دوروں کے ایک نئے اقدام کا اعلان کیا ہے۔ رواداری کے سال کے ایک حصے کے طور پر ابوظبی جنرل اتھارٹی برائے اسلامی امور اور اوقاف کی طرف سے مختلف گرجا گھروں کے تعاون سے شروع کئے گئے مساجد کے دوروں کے پروگرام کا مقصد امارت کی مساجد کے دوروں کے ذریعے سیاحوں کو اسلامی تاریخ اور ثقافت سے روشناس کرنا ہے۔ پروگرام کی افتتاحی تقریب میں سینٹ جوزف کیتھیڈرل کے فادر اینڈرسن تھامسن اور سینٹ انتھونی کے کیتھڈرل برائے کاپٹک آرتھوڈوکس کے فادر فاخرو بشپ، اسلامی امور کی جنرل اتھارٹیاینڈوومنٹ کے اسلامی امور کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر عمر ہیبتور الدری اور ڈی سی ٹی ابو ظبی کے مارکیٹنگ ڈائریکٹر سعید رشید آل سعید شریک تھے۔ دورے میں ابو ظبی اتھارٹی برائے اسلامی امور اور اوقاف کے نمائندوں اور گرجا گھروں کے نمائندے ایک ساتھ تھے جو رواداری، بقائے باہمی اور تعاون کی اقدار کی عکاسی ہے۔ اس اقدام کے پہلے مرحلے میں متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت میں تاریخی اعتبار سے اہم اور مشہور مساجد کی نشاندہی کرکے انکا انتخاب کیاگیا۔ اس دورے میں پانچ مساجد کا احاطہ کیا گیا ہے جن میں شیخ سلطان بن زاید پہلی مسجد، المرینا میں الکریم مسجد، جزیرے ریم پر واقع العزیز مسجد، شیخ زاید بن سلطان مسجد الخالدیہ اور المشریف کی مریم ام عیسیٰ مسجد شامل ہیں۔ اس اقدام کے افتتاحی دورے میں الخالدیہ میں شیخ زاید بن سلطان اور المشریف کی مریم ام عیسیٰ مسجد کا دورہ شامل ہے۔ اس دورے میں مہمانوں کو مساجد کے آداب سے تعارف کرنے کے ساتھ ساتھ مساجد کے مذہبی اور معاشرتی کردار کا تعارفی جائزہ بھی فراہم کیا گیا۔ اس دورے کے دوران مہمانوں کو ڈھانچے کی تعمیر اور بحالی کے لئے کی جانے والی کوششوں اورمساجد کی تاریخ کے بارے میں معلومات فراہم کی گئیں۔ ڈی سی ٹی ابو ظبی میں سیاحت اور مارکیٹنگ شعبے کے قائم مقام ایگزیکٹو ڈائریکٹر علی حسن الشیبہ نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے رواداری کے سالانہ اہداف کے تحت اس منفرد اقدام کو شروع کرنے میں اسلامی اتھارٹی اور اوقاف کی جنرل اتھارٹی کے ساتھ تعاون کرنے پر انھیں خوشی ہے۔ انھوں نے کہا کہ مساجد کے دوروں کا مقصد ہمارے آباؤ اجداد کی تعمیر کردہ تاریخی مساجد اور نئی نسل کی عصر حاضر کی مساجد کے ذریعے اسلامی ثقافت اور تہذیب کی خصوصیات سے روشناس کرانا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اماراتی دارالحکومت کی اصلیت اور صداقت کا انتخاب ان تمام مساجد میں ہوتا ہے اور وہ یہاں آنے والوں کو اسلام کی حقیقی تعلیمات سے آشنا ہونے اور ان اقدار پر تعلیم دینے کا موقع فراہم کرتی ہیں جو ہمیں رواداری اور عظیم اخلاق کی تعلیم دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ اقدام مساجد میں استعمال کئے گئے اسلامی فن تعمیر کی تفصیلات اور اماراتی معاشرے میں مساجد کے ذریعے قبولیت، پرامن بقائے باہمی اور تعاون کی علامت کے طور پر ادا کئے گئے کردار کی نشاندہی کرنے میں معاون ثابت ہوگا۔ اس اقدام کا مقصد سیاحوں کو اسلامی تاریخ اور ثقافت اور مسجد کی فن تعمیر سے روشناس کروانا ہے اور اسلامی فن تعمیر میں دکھائے جانے والے آرائشی آرٹ کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302811422

WAM/Urdu