اتوار 13 جون 2021 - 3:53:15 شام

صدر بائیڈن کے منصوبے سے مشرق وسطی کو صاف توانائی کا برآمد کنندہ بننے میں مدد ملے گی

  • photo5850515691273303182
  • photo5850515691273303180
  • photo5848417672763651703
  • photo5848417672763651706
  • photo5848417672763651705 (1)
  • 1 (3)
  • 3 (1)
  • 2 (16)
  • 4 (1)
  • 5

بنسل عبدالقادرسے ابوظہبی ، 20 مئی ، 2021 (وام) ۔۔ بین الاقوامی ادارے کے ایک عہدیدار،ماہرین اور خطے میں اہم صنعتی رہنماوں کا کہنا ہے کہ بائیڈن انتظامیہ کی امریکہ میں قابل تجدید توانائی کے منصوبوں کا مشرق وسطی ، خاص طور پر خلیج عرب میں توانائی کے شعبے پر وسیع اثر پڑے گا۔ 2050 تک صفر کاربن کے ساتھ سو فیصد صاف توانائی کی حامل معیشت کے بائیڈن منصوبے کے بارے میں امارات نیوز ایجنسی (وام) سے گفتگو کرتے ہوئے بین الاقوامی قابل تجدید توانائی ایجنسی (ارینا) کے ڈائریکٹر جنرل فرانسیسکو لا کمیرا نے کہا کہ اس طرح کی کوششوں سے ناقابل یقین علاقائی ترقی کی حوصلہ افزائی ہوگی کیونکہ مشرق وسطی میں قابل تجدید توانائی کی زیادہ سے زیادہ پیدوار اور مستقبل میں قابل تجدید توانائی اور ایندھن کا خالص برآمد کنندہ بننے کے وسیع مواقع موجود ہیں۔ دریں اثنا ، ایک ماہر نے توقع ظاہر کی ہے کہ امریکی منصوبہ مشرق وسطی کے قابل تجدید توانائی کے شعبے میں تکنیکی ترقی کو فروغ دے گا،بڑے صنعتی ادارے جیسے مصدر ، ابو ظہبی فیوچر انرجی کمپنی اور سیمنز انرجی مڈل ایسٹ نہ صرف قابل تجدید توانائی کی صنعت کے حصول کی توقع کرتے ہیں بلکہ امریکہ میں کاروباری مواقع حاصل کرنے کے بھی خواہاں ہیں۔ صاف توانائی کی معیشت اور لاکھوں نئی ​​ملازمتیں صدر بائیڈن نے اپنے پہلے 100 دن میں نیا امریکی انفراسٹرکچر اور صاف توانائی معیشت کی تعمیر کے لئے بڑے پیمانے پر اقدامات کیے جس سے لاکھوں نئی ​​ملازمتیں پیدا ہوں گی۔ وائٹ ہاؤس کے ایک بیان کے مطابق ، صدر نے 2035 تک کاربن آلودگی سے پاک بجلی کے شعبے کو حاصل کرنے کے اہداف کا اعلان کرتے ہوئے ایک ایگزیکٹو آرڈر جاری کیا جس سے امریکہ کو صفر کاربن معیشت کی ناقابل واپسی راہ پر گامزن کیا گیا ہے۔ واشنگٹن کی ایک غیر منافع بخش تنظیم ، انٹرنیشنل سنٹر فار جرنلسٹس کے زیر انتظام "پہلے 100 دن کے رپورٹنگ پروگرام" میں تبادلہ خیال کیا گیا۔ پروگرام میں شریک افراد میں امارات نیوز ایجنسی ، وام سمیت دنیا بھر کے میڈیا اداروں کے ایک درجن کے قریب صحافی شامل تھے۔ اس قدام کےمتحدہ عرب امارات اور سعودی عرب سمیت ، خطے میں مثبت اثرات ارینا کے سربراہ نے بائیڈن کے صاف توانائی ا قدام کے حوالے سے کہا کہ امکان ہے کہ آب و ہوا اور توانائی کی منتقلی کے معاملات امریکہ اور خلیجی خطے کے ممالک کے مابین تعاون اور سفارتکاری کے اہم شعبے بن جائٰں گے،انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب دونوں ہی اپنی توانائی کے شعبے کو نئی ​​شکل دینے کے لئے بہت مثبت اقدام اٹھارہے ہیں۔ مشرق وسطی کی صاف توانائی کی صلاحیت اور ٹکنالوجی کی ترقی ارینا کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ مراکش ، مصر ، اردن اور دیگر تمام ممالک میں بھی ناقابل یقین علاقائی پیشرفت ہو رہی ہے۔مجھے یقین ہے کہ مشرق وسطی کے پاس اہم موقع ہے کہ وہ قابل تجدید توانائی کے وسائل کو زیادہ سے زیادہ استعمال کرے اور ایک مرکزی کردار ادا کرتے ہوئے مستقبل میں قابل تجدید توانائی اور ایندھن کا خالص برآمد کنندہ بن سکے۔ اس صنعت کے ایک ماہر نے وام کو بتایا کہ بائیڈن کا منصوبہ مشرق وسطی کے قابل تجدید توانائی کے شعبے میں تکنیکی ترقی کو فروغ دے گا۔ یورپی یونین کے جی سی سی اسٹریٹجک منصوبے ، یورپی یونین کے جی سی سی کلین انرجی نیٹ ورک کے ڈائریکٹر فرینک واؤٹرز نے کہاکہ مشرق وسطی ، خاص طور پر خلیجی ممالک ، امریکہ میں تکنیکی پیش رفت کی رہنمائی کے لئے منتظر ہیں۔ امریکی روزگار کی منصوبہ بندی اور ٹیکنالوجی کی ترقی فرینک واؤٹرز نے کہا کہ ٹیکنالوجی میں سرمایہ کاری بین الاقوامی منافع کا باعث بنے گی۔امریکی روزگار پلان امریکہ میں ایک سرمایہ کاری ہے جو لاکھوں اچھی ملازمتیں پیدا اور ملک کے بنیادی ڈھانچے کی تعمیر نو کرے گی ۔ علاقائی صنعت کے ادارے امریکی کاروباری مواقع کے منتظر مصدر نے توقع ظاہرکی ہے کہ بائیڈن کا منصوبہ اس کمپنی کے لئے امریکہ میں متعدد مواقع فراہم کرے گا ، مصدر کے سی ای اومحمد جميل الرمحي نے وام کو بتایا کہ امریکہ میں ہمارے پاس ٹیکساس ، کیلیفورنیا اور دوسری جگہوں پر بڑے منصوبے ہیں۔ ہم توقع کرتے ہیں کہ قابل تجدید توانائی کی پیدوار تیز ہوگی۔صدر بائیڈن کے دوبارہ بہتر تعمیر کا اقدام بھی وسیع مواقع فراہم کرتا ہے،اس منصوبے کے تین اہم حصے ہیں جن میں امریکن ریسکیو پلان ، امریکن روزگار پلان اور امریکن فیملیز پلان شامل ہیں۔ 20 کھرب ڈالر کے امریکی منصوبے میں مواقع مصدر کے سی ای او نے کہا کہ 20 کھرب امریکی ڈالر کا پہلا اقدام موجودہ انفراسٹرکچر کو بڑھانے اور صاف توانائی میں اہداف پر مبنی سرمایہ کاری ، بجلی کی گرڈ کو ڈی آر بونائز کرکے آلودگی کو کم کرنے ، بجلی کے شعبے میں سرمایہ کاری اورگاڑیوں اور عمارتوں اور شہروں میں توانائی کے استعمال کو کم کرنا ہےپوری امید ہے کہ اس حجم اور وسعت کا پروگرام ہمارے لئے بہت سارے مواقع فراہم کرے گا ہائیڈروجن صلاحیت سیمنز انرجی مڈل ایسٹ کے منیجنگ ڈائریکٹر ڈائیٹمار سیئرسورفر نے وام کو بتایاکہ "ہمارے پاس امریکہ میں ہائڈروجن پائلٹ کے متعدد منصوبے ہیں جو ہمیں مستقبل میں ہائیڈروجن کی بڑی مقدار کو گرڈ میں ضم کرنے کا موقع فراہم کریں گے۔ عالمی اور گھریلو اثرات بائیڈن کے صاف توانائی منصوبے کے وسیع عالمی اثرات کے بارے میں ، ارینا سربراہ نے کہا کہ وہ توقع رکھتے ہیں کہ امریکہ مزید وعدوں کی کو بھی پورا کرے گا جو ابھی تک قومی سطح پر طے شدہ شراکت (این ڈی سی) اور 2050 اہداف کے ساتھ آگے بڑھنے کے لئے ضروری ہیں۔ بائیڈن کے منصوبے کی اہمیت کے بارے میں ، انہوں نے کہا کہ توانائی کے بارے میں بائیڈن انتظامیہ کا موقف بالکل واضح ہے۔ ماحولیاتی اور معاشی مقاصد ایک ساتھ لا کمیرا نے کہا کہ صدربائیڈن نے اپنے ماحولیاتی اور معاشی مقاصد کو اپنے منصوبے کا مرکز بنایا ہے ، اور مجھے یقین ہے کہ اس سے روزگار کے حوالے سے مثبت فوائد حاصل ہوں گے ۔ ترجمہ۔تنویر ملک https://www.wam.ae/en/details/1395302936138

WAM/Urdu