اتوار 13 جون 2021 - 2:34:13 شام

NCEMAاور GCC ایمرجنسی مینجمنٹ سنٹرکابراکہ میں جوہری مشق کی تیاری پر تبادلہ خیال


ابوظبی،30 مئی، 2021 (وام) ۔۔ نیشنل ایمرجنسی کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این سی ای ایم اے) اور کویت میں واقع جی سی سی ایمرجنسی مینجمنٹ سنٹر میں رابطہ افسران کے مابین رابطہ کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا اور اس میں بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کی انتہائی پیچیدہ جوہری ہنگامی مشق ConvEx-3 کی جاری تیاریوں پر تبادلہ خیال کیاگیا۔ اس مشق کو "براکہ متحدہ عرب امارات" کا نام دیا گیا ہے اور اس میں فیڈرل اتھارٹی برائے نیوکلیئر ریگولیشن (ایف اے این آر) اور نواہ انرجی کمپنی (نواہ) کے نمائندوں نے بھی شرکت کی ۔ اجلاس کا مقصد ConvEx-3 کے انعقاد کے لئے جوہری ہنگامی تیاری اور ردعمل کی صلاحیتوں کی نشاندہی کرنا ہے جو اس سال کی چوتھی سہ ماہی میں ہوگی اور متحدہ عرب امارات اسکی میزبانی کرے گا۔ یہ بین الاقوامی سطح کی مشق بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اے ای اے) کی نگرانی میں براکہ نیوکلیئر پاور پلانٹ میں کی جائے گی اور اس میں 170 سے زیادہ ممالک اور بین الاقوامی تنظیموں کو شرکت کی دعوت دی گئی ہے۔ یہ دنیا کی ایک انتہائی پیچیدہ مشق ہے اور بین الاقوامی ہنگامی کنونشنز کے مطابق کسی بھی ہنگامی جوہری صورتحال سے نمٹنے کیلئے ہر تین سے پانچ سال بعد ہوتی ہے۔ یہ مشق موجودہ مواصلات اور تعاون کے پروٹوکول کا اندازہ کرنے کے ساتھ ساتھ قومی اور بین الاقوامی رد عمل کے نظام میں بہتری کے شعبوں کی نشاندہی کرنے کا بھی موقع فراہم کرتی ہے۔ اجلاس کے دوران این سی ای ایم اے نے بین الاقوامی مشق کا ایک جائزہ لیا جبکہ ایف این آر اور نواہ کے نمائندوں نے اس مشق کی تنظیم کے دوران جی سی سی ایمرجنسی مینجمنٹ سنٹر کی ذمہ داریوں پر تبادلہ خیال کرنے کے علاوہ ایونٹ کی میزبانی کے لئے جاری تیاریوں کے بارے میں پریزنٹیشن بھی پیش کی۔ اجلاس کے اختتام پر شرکاء نے بین الاقوامی مشق کی تیاری کے لئے جی سی سی ایمرجنسی مینجمنٹ سنٹر اور این سی ای ایم اے سے وابستہ قومی آپریشن سینٹر کے مابین ٹیبل ٹاپ اور کیمونیکیشن مشقیں کرنے کی سفارش کی۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302939002

WAM/Urdu