اتوار 13 جون 2021 - 2:37:37 شام

متحدہ عرب امارات نے زیمبیا ، کانگو اور یوگنڈا سے مسافروں کی آمد معطل کردی


ابوظہبی ، 10 جون ، 2021 (وام) ۔۔ جنرل سول ایوی ایشن اتھارٹی اور نیشنل ایمرجنسی ، کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی نے زیمبیا ، عوامی جمہوریہ کانگو او یوگنڈا سے مسافروں کی آمد کو معطل کردیا ، یہ پابندی تمام قومی اور غیرملکی فضائی کمپنیوں کے ذریعے ان ممالک سے آنے والوں پر عائد کی گئی اور اسکا اطلاق جمعہ 11 جون 2021 کو رات 11 بجکر 59 منٹ پر ہوگا ، اسے ان ممالک سے آںے والے ٹرانزٹ مسافروں پر بھی عائد کیا گیا ہے – اس فیصلے سے متحدہ عرب امارات آکر ان تینوں ممالک جانے والے پروازوں کو استثنی دیا گیا ہے ۔ اس پابندی کا ان تمام مسافروں پر اطلاق ہوگا جو متحدہ عرب امارات آنے سے 14 دن قبل زیمبیا ، جمہوریہ کانگو اور یوگنڈا میں رہے تھے – ان تینوں ممالک اور متحدہ عرب امارات کے درمیان پروازیں جاری رہیں گے اور انہیں متحدہ عرب امارات سے ان تینوں ممالک کیلئے مسافر لے جانے کی اجازت ہوگی ۔ اس کے علاوہ پروازوں کو ان تینوں ممالک سے بعض استثنی والے گروپس کو متحدہ عرب امارات لانے کی اجازت بھی دی گئی ہے جن کیلئے سخت ترین احتیاطی و حفاظتی اقدامات بروئے کار لانا ہونگے – ان استثنی گروپس میں اماراتی شہری اور ان کے فرسٹ ڈگری والے رشتہ دار ، ایکریڈیٹڈ سفارتی مشن کے عہدیدار بشمول سفارتخانے کے انتظامی شعبوں کے عہدیدار ، وفاقی اتھارٹی برائے شہریت و شناخت کے منظور شدہ ناگزیر ملازمت والے افراد ، غیرملکی کارگو اور ٹرانزٹ طیاروں کا عملہ شامل ہے تاہم انہیں عرب امارات روانگی سے 48 گھنٹے قبل کووڈ 19 کا منفی پی سی آر ٹیسٹ دکھانا ہوگا ۔ انہیں ملک سے روانگی کے وقت تک قرنطینہ میں رہنا ہوگا – استثنی والے گروپس کو ملک میں آمد پر احتیاطی و حفاظتی اقدامات بھی بروئے کار لانا ہونگے جن میں 10 روزہ قرنطینہ اور ایئرپورٹ پر پی سی آر ٹیسٹ اور ملک میں آمد کے چوتھے اور آٹھویں دن پھر ایسا ہی ٹیسٹ شامل ہیں - مزید برآں پی سی آر ٹیسٹ کے قابل جواز ہونے کے عرصہ کو 72 گھنٹوں سے کم کرکے 48 گھنٹے کردیا گیا جوکہ مصدقہ اور منظور شدہ کیو آر کوڈ کی حامل لیبارٹریز سے جاری شدہ ہونے چاہیئں- اتھارٹی نے اس فیصلے سے متاثر ہونے والے تمام مسافروں کو کہا ہے کہ وہ اپنی پروازوں کی تبدیلی اور منزل تک محفوظ و بلا تاخیر آمد کیلئے اپنی متعلقہ ایئرلائن سے رابطہ میں رہیں – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302942403

WAM/Urdu