اتوار 13 جون 2021 - 7:01:09 صبح

دنیا سے پولیو کے خاتمے کی حکمت عملی 2026-2022 کا آغاز کردیا گیا


جنیوا، 10 جون، 2021 (وام) ۔۔ پولیو کے خاتمہ کے عالمی اقدام (جی پی ای آئی) نے دنیا سے پولیو کے خاتمے کی حکمت عملی 2026-2022 کا آغاز کردیا ہے۔ 2020 میں جی پی ای آئی نے COVID-19 کے پھیلاؤ سے معاشروں کو بچانے کے لئے چار مہینوں تک انسداد پولیو کی گھر گھر جاکر قطرے پلانے کی تمام مہموں کو روک دیا اور تقریبا 50 ممالک میں وباء سے بچاؤ کی کوششوں میں 30ہزارپروگرام عملے اور 100 ملین سے زیادہ پولیو وسائل فراہم کئے۔ عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیڈروس اذانوم نے کہا کہ اس نئی حکمت عملی کے ساتھ جی پی ای آئی نے واضح طور پر اس بات کی نشاندہی کی ہے کہ کس طرح دنیا کو پولیو سے پاک بنانے میں حتمی رکاوٹوں کو دور کرکے آنے والی نسلوں کوصحت منداور تندرست معاشرہ فراہم کیا جائے گا۔ تاہم انھوں نے کہا کہ اس کامیابی کے لئے ہمیں حکومتوں اور عطیہ دہندگان سے فوری طور پر سیاسی اور مالی وعدوں کی تجدید کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا کہ پولیو کا خاتمہ ایک اہم موقع پر ہے۔ یہ ضروری ہے کہ ہم نئی حکمت عملی پر بھرپور عمل درآمد کریں اور اس بیماری کو ختم کرکے مل کر تاریخ رقم کریں۔ پاکستان اور افغانستان جو ابھی تک پولیو سے پاک نہیں ہوسکے ہیں کے رہنماؤں نے عالمی یکجہتی اور اس بیماری کے مکمل خاتمے کے لئے ضروری وسائل کی فراہمی پر زور دیا ہے۔ انہوں نے پولیو کے زیادہ خطرہ میں کمیونٹی کے ساتھ ویکسی نیشن مہم اور کمیونٹی کے ساتھ شمولیت کو بہتر بنانے کے لئے جی پی ای آئی کے ساتھ اپنی شراکت کو مستحکم کرنے کا عہد کیا ہے۔ صحت سے متعلق وزیر اعظم پاکستان کے معاون خصوصی ڈاکٹر فیصل سلطان نے کہا کہ ہم اپنے جی پی ای آئی کے شراکت داروں کے ساتھ پاکستان میں پولیو کے خاتمہ کے لئے حتمی رکاوٹوں خاص طور پر ویکسی نیشن مہموں کو مستحکم کرنے اور مختلف طبقوں کے ساتھ اپنی مصروفیات کے ذریعے اس معاملے کو حل کرنے کے لئے سخت محنت کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ پولیو کا خاتمہ صحت کی اولین ترجیح بنی ہوئی ہے اور پاکستان جی پی ای آئی کی نئی حکمت عملی کو مکمل طور پر نافذ کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم پولیو سے پاک دنیا کے حصول کے لئے بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کرنے کے منتظر ہیں۔ افغانستان کے قائم مقام وزیر برائے صحت عامہ ڈاکٹر وحید مجروح نے کہا کہ افغانستان جی پی ای آئی کے نئے اسٹریٹجک منصوبے پر عمل درآمد اور اپنی سرحدوں سے پولیو کے خاتمے کے لئے پوری طرح پرعزم ہے۔ انھوں نے کہا کہ دنیا کو پولیو سے پاک کرنے کیلئے ہمیں مل کر کام کرنا ہوگا۔ 2026 -2022 کی حکمت عملی میں پولیو کے خاتمے کی کوششوں کو فوری طور پر بحال کرنے کی ضرورت کی نشاندہی کی گئی ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302942425

WAM/Urdu