پیر 14 جون 2021 - 12:32:29 صبح

کورسیرا گلوبل اسکلز رپورٹ 2021 : مجموعی کاروباری مہارتوں میں متحدہ عرب امارات دنیا بھر میں دوسرے نمبر پر


دبئی ، 9 جون ، 2021 (وام) ۔۔ کورسیرا کی گلوبل اسکلز رپورٹ 2021 کے مطابق متحدہ عرب امارات مجموعی کاروباری مہارتوں کے شعبہ میں مینا خطے میں پہلی اور لکسمبرگ کے بعد عالمی سطح پر دوسرے نمبر پر ہے۔ رواں سال کا جائزہ وبا کے آغاز کے بعد سے 100ممالک سے کاروبار،،ٹیکنالوجی اور ڈیٹا سائنس کے شعبوں میں مہارت کے پلیٹ فارم پر7کروڑ70لاکھ سے زیادہ لرنزرکی کاکردگی کی بنیاد پر لیا گیا۔مواصلات ، کاروباری فروغ ، لیڈرشپ ، منیجمنٹ ، ، حکمت عملی اور آپریشنز وہ شعبے ہیں جن میں متحدہ عرب امارات کے لرنرز نے کاروباری مہارت میں اعلی 97 فیصد یا اس سے زیادہ درجے حاصل کئے۔ اگرچہ متحدہ عرب امارات کی مجموعی کاروباری مہارت عالمی سطح پر سرفہرست درجوں کے قریب ہے ، لیکن ٹیکنالوجی اور ڈیٹا سائنس کی مہارت مستقل نمو کے شعبوں کی نمائندگی کرتی ہے۔ متحدہ عرب امارات کی قومی ترقی اور معاشی ترقی کے ڈرائیور کی حیثیت سے ڈیجیٹل تبدیلی کو ترجیح دینے کے ساتھ ، گلوبل اسکلز رپورٹ میں متحدہ عرب امارات کے پیشہ ور افراد کے لئے ان شعبوں میں اعلی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے کے اہم مواقع پر روشنی ڈالی گئی ہے جس میں ملک میں ٹیکنالوجی اور ڈیٹا سائنس کی مہارتوں کے ٹیلنٹ پولز کو بالترتیب 72 اور71واں درجہ دیا گیا ہے۔ ای ایم ای اے کے لئے کورسیرا کے نائب صدر انتھونی ٹیٹرسال نے کہاحالیہ برسوں میں ، متحدہ عرب امارات کی حکومت نے متعدد اقدامات اٹھائے ہیں ، جن کا مقصد مہارتوں پر مبنی معیشت کو فروغ دینا ہے۔ جس کے معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہو رہے ہیں جس کا ثبوت ہماری درجہ بندی میں متحدہ عرب امارات کی کاروباری قیادت کی اعلی حیثیت ہے ۔ سائنس ، ٹیکنالوجی ، انجینئرنگ اور ریاضی (ایس ٹی ای ایم) کورس کے اندراجات میں اضافہ حوصلہ افزا ہے جس میں متحدہ عرب امارات میں خواتین کا ڈیجیٹل مہارت میں نمایاں حصہ ہے متحدہ عرب امارات میں خواتین کے حوالے سے ایس ٹی ای ایم میں اندراجات کا حصہ 2018-1919 کے 33 فیصد سے بڑھ کر 2019-2020 میں 41 فیصد ہوگیا ہے۔ ملک کی مجموعی ٹیکنالوجی مہارت کی کارکردگی کا ایک اور قابل ذکر شعبہ سیکیورٹی انجینئرنگ میں اس کی مسابقت کا ہے ، جس میں متحدہ عرب امارات کا درجہ 77 فیصد ہے۔ ملک میں وبا کے دوران سائبرحملوں میں 250 فیصد اضافے سے متحدہ عرب امارات میں سائبرسیکیوریٹی کی مہارتوں کی جانب توجہ اور انہیں ترقی دینے کی ضرورت پر زوردیا گیا ہے۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302942085

WAM/Urdu