منگل 27 جولائی 2021 - 10:18:32 شام

وسطی اورجنوبی ایشیاء کے درمیان رابطوں سے خلیج کے ساتھ تجارت میں اضافہ ہوگا:ازبک سفیر

  • 123
  • 12345

ابوظہبی ، 15 جولائی ، 2021 (وام) ۔۔ ازبکستان کے ایک اعلی سفارت کار نے کہا ہے کہ ان کے ملک کی جانب سے وسطی اور جنوبی ایشیاء کے درمیان رابطے بڑھانے کے منصوبے سے دونوں خطوں اور خلیج عرب خصوصاًمتحدہ عرب امارات کے مابین تجارتی تعلقات بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ متحدہ عرب امارات میں ازبکستان کے سفیر بختیور ابراگیموف نے امارات نیوز ایجنسی وام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کے ملک اور خلیج عرب کے ممالک کے درمیان براہ راست زمینی راستہ نہیں جو تجارت میں اضافے کی بڑی رکاوٹ ہے۔خلیج عرب کی اہم بندرگاہوں خصوصاً فجیرہ کی بندرگاہ تک ازبک مصنوعات لانے کے لئے ہمیں پاکستانی بندرگاہوں تک رسائی حاصل کرنا ہوتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کی رابطے سے ازبک کی برآمدی مصنوعات کی مسابقت کو بہتر بنانے میں مدد ملے گی کیونکہ نقل و حمل کے سستے اخراجات کے ساتھ پیداواری لاگت بھی کم ہوگی۔ ابراگیموف نے ان خیالات کا اظہار تاشقند میں جاری "وسطی اور جنوبی ایشیا: علاقائی رابطے،چیلنجز اور مواقع" کے عنوان سے بین الاقوامی کانفرنس کی اہمیت کے حوالے سے کیا۔ سفیر نے زور دے کر کہا کہ کانفرنس کا بنیادی مقصد دنیا بھر میں فیصلہ سازوں اور سرمایہ کاروں کی توجہ جنوبی ٹرانسپورٹ راہداری کی تعمیر کی اہمیت کی جانب راغب کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کانفرنس کے شرکاء جدید ٹرانسپورٹ اور مواصلاتی انفراسٹرکچر کی ترقی اور افغانستان کے راستے ازبکستان سے کراچی اور گوادر میں واقع پاکستانی بندرگاہوں تک جنوبی ٹرانسپورٹیشن کوریڈور کے منصوبے پر عمل درآمد کے بارے میں تبادلہ خیال کریں گے ،جو وسطی ایشیائی ریاستوں کو پاکستانی سمندر تک مختصر اور معاشی طور پر سستا راستہ فراہم کرتے ہیں۔ان کوششوں سے وابستہ وسطی ایشیائی ریاستوں اور متحدہ عرب امارات کے مابین اشیا کی ترسیل بہتر بنانے میں مدد ملے گی۔ سفیر نے مزید کہا کہ اس سے وسطی اور جنوبی ایشیائی ممالک میں اضافی ملازمتیں پیدا کرنے میں بھی مدد ملے گی۔ یہ خاص طور پر افغانستان کے لئے ایک بہت اہم ہے۔ معاشی اور سرمایہ کاری تعاون سے خطے میں دیرپا امن اور استحکام پیدا ہوگا۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302953034

WAM/Urdu