جمعرات 27 جنوری 2022 - 10:14:49 شام

عالمی جیو جیتسو کے سربراہان کا اہم مقابلوں کے انعقاد پر ابوظہبی سے اظہار ساتئش


ابوظہبی، 6 نومبر، 2021 (وام) ۔۔ جیو جیتسو انٹرنیشنل فیڈریشن (جے جے آئی ایف) نے جیو جیتسو ورلد چیمپیئن شپ کے کامیاب انعقاد پرابوظہبی کی تعریف کی ہے جوزاید اسپورٹس سٹی کے جیو جیتسو ارینا میں 11نومبر تک جاری رہے گی،فیڈریشن نے جے جے ڈبلیو سی کے اگلے ایڈیشن کے لیے متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت کو میزبانی کا حق دیا ہے۔ ابوظہبی ایگزیکٹو آفس کے چیئرمین شیخ خالد بن محمد بن زاید آلنھیان کی سرپرستی میں منعقد ہونے والے مقابلوں میں گولڈ میڈل جیتنے اور اور متحدہ عرب امارات میں ہونے والے 2022 کے عالمی مقابلوں کے لئے کولیفائی کرنے کے لئے ہزاروں عالمی ایتھلیٹس حصہ لے رہے ہیں۔ ابوظہبی میں جیو جیتسو ورلد چیمپیئن شپ کے موقع پر منعقد ہونے والی جیو جیتسو انٹرنیشنل فیڈریشن کی کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے، آئی آٗئی جے ایف کے صدرپانا گائیٹس تھیوڈوروپولیس نے کہا کہ گزشتہ 18 ماہ کے دوران متحدہ عرب امارات جیو جیتسو فیڈریشن کی کوششوں کے باعث ہمارے کھیل میں کوئی رکاوٹ نہیں آئی،جس نےابوظہبی میں اعلیٰ ترین سطح پر براعظمی اور بین الاقوامی ٹورنامنٹس کا انعقاد کرایا۔ کانگریس میں میزبان ملک کے نمائندہ متحدہ عرب امارات جیو جیتسو فیڈریشن کے سیکرٹری جنرل فہد علی الشامسی اور جیو جیتسو انٹرنیشنل فیڈریشن (جے جے آٗئی ایف) کے ڈائریکٹر جنرل جوآشم تھمفارت، قومی فیڈریشنوں کے اراکین، براعظمی فیڈریشنز کے نمائندوں اور دیگر نے شرکت کی۔ کانگریس کے دوران، جیو جیتسو انٹرنیشنل فیڈریشن کے اراکین نے گزشتہ دو ایونٹس کی کامیاب میزبانی کے بعد، 2022 میں جیو جیتسوورلڈ چیمپئن شپ کے اگلے اور 27 ویں ایڈیشن کی میزبانی کے لیے متحدہ عرب امارات کی حمایت کا اعلان بھی کیا۔ الشامسی نے کہا کہ ہم اپنی حمایت پر انتہائی مشکور اورعالمی سطح پر جیو جیتسو انٹرنیشنل فیڈریشن اور کھیل کی کامیابی کو مستحکم اور برقرار رکھنے کی حوصلہ افزائی کر رہے ہیں،ہم اس کی ترجیحات اور مستقبل کے منصوبوں کو جلد از جلد مکمل کرنے پر کام کریں گے۔ اس کے علاوہ کانگریس کے ایجنڈے کے تحت جے جے آئی ایف کے صدارتی انتخابات میں موجودہ صدر تھیوڈوروپولس کو 2024 تک اس عہدے پر برقرار رکھنے کا متفقہ فیصلہ کیاگیا۔ دوبارہ منتخب ہونے کے بعد کانگریس سے خطاب کرتے ہوئے صدر نے کہاکہ متفقہ انتخاب کے بعد ان پر بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے،خصوصا کھیلوں کے سلسلہ کو کامیابی سے برقرار رکھنا،اسے ترقی دینا اور عالمی اولمپک کمیٹی سے زیادہ سے زیادہ دوسال میں تسلیم کروانے کے لئے سخت محنت کرنا ہوگی۔ دریں اثنا، اجلاس میں غیر فعال یونینز کی رکنیت پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے ایسی یونینز کو اپنی رکنیت منسوخ کرنے کا کہا گیا تاکہ کھیل کو ترقی دینے کے خواہشمند دوسروں کے لیے جگہ بنائی جا سکے۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302989605

WAM/Urdu