جمعرات 09 دسمبر 2021 - 4:14:00 صبح

متحدہ عرب امارات کئی سال تک توانائی کےشعبے میں اہم کردارادا کرنے کیلئے تیارہے:شریف العلماء


دبئی، 24 نومبر، 2021 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات کی وزارت توانائی اور انفراسٹرکچر کے انڈر سیکرٹری شریف العلماء نےکہا ہےکہ ہائیڈرو کاربن توانائی کی عالمی ضروریات میں ہمیشہ کردار ادا کرے گا ۔ تیل اور گیس کے شعبے کا کامیاب مستقبل کم کاربن کے اخراج اور پیداواری حل تیار کرنے پر منحصر ہے اور متحدہ عرب امارات آنے والے کئی سال تک توانائی کے عالمی شعبے میں اہم کردار ادا کرنے کے لیے تیارہے۔ وہ ایکسپو 2020 کے دبئی نمائشی مرکز میں جی ایم آئی ایس ویک کے دوران منعقد ہونے والی گرین چین کانفرنس کے افتتاحی سیشن کے دوران گفتگو کر رہے تھے۔ فائر سائیڈ چیٹ میں انہوں نےکہا کہ متحدہ عرب امارات نے ہمیشہ توانائی کے مکس کی تلاش کی ہے جس کا آغاز 1973 میں ابوظبی نیشنل آئل کمپنی مائع قدرتی گیس (ADNOC LNG) کے قیام سے ہوا۔ شریف العلماء نے عرب امارات کی توانائی کی حکمت عملی 2017 میں متحدہ عرب امارات انرجی اسٹریٹجی 2050 کےآغاز اور حال ہی میں متحدہ عرب امارات ہائیڈروجن لیڈرشپ روڈ میپ اور نیٹ زیرو 2050 تک اسٹریٹجک اقدام کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ توانائی کی صنعت میں پہلی تحریک کے طور پر متحدہ عرب امارات کی اچھی شہرت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مجھے کوئی ایسی صورتحال نظر نہیں آتی جس میں زیروہائیڈرو کاربن کی ضرورت ہو۔ اگر ہماری تیل کی پیداوار نصف تک گرتی ہے تو یہ وہ ممالک ہوں گے جن کی پیداواری لاگت اورحجم میں کاربن کی شدت کم ہے۔ گرین چین کانفرنس ایکسپو کے دبئی نمائش مرکز میں GMIS ویک کے ساتھ ساتھ منعقد کی گئی جس میں پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر کے 250 سے زیادہ عالمی رہنماؤں نے شرکت کی۔ چھ روزہ ایونٹ کے دوران ایک مینوفیکچرنگ اور جدید ٹیکنالوجی کی نمائش میں 30 سے زائد عالمی معیار کے نمائش کنندگان شامل ہیں جو متحدہ عرب امارات کی حکومت کی (Make it in the Emirates) مہم کو اجاگر کر رہے ہیں۔ یہ مقامی اور بین الاقوامی سرمایہ کاروں کی حوصلہ افزائی کے لیے اپنی نوعیت کا پہلا اقدام ہے۔ گرین چین کانفرنس میں وسیع پیمانے پر اقتصادیات اور اس کے اخراج کے اہداف کو تیز کرنے کی صلاحیت کے موضوعات گرین ہائیڈروجن میں ڈیکاربونائزیشن سرمایہ کاری، ابوظبی ہائیڈروجن الائنس کی نمائش، مبادلہ انوسٹمنٹ کمپنی (مبادلہ)، ابوظبی نیشنل آئل کمپنی (ادنوک) اور ADQ کے درمیان شراکت داری، گورننس قائم کرنے اور متحدہ عرب امارات میں مقامی بلواور گرین ہائیڈروجن اکانومی کی تعمیر کے حوالےسےبھرپور مباحثوں کا ایک سلسلہ پیش کیا گیا۔ ترجمہ۔ریاض خان http://wam.ae/en/details/1395302996372

WAM/Urdu