جمعرات 18 اگست 2022 - 9:50:29 شام

متحدہ عرب امارات،بحرین کا مشترکہ سیٹلائیٹ21دسمبرکوخلاء میں روانہ کیا جائیگا


ابوظبی، 19 دسمبر، 2021 (وام) -- متحدہ عرب امارات اور بحرین کامشترکہ nanosatellite Light-1 21 دسمبر 2021 کو بین الاقوامی خلائی اسٹیشن کے لیے روانہ کیا جائے گا۔ یہ مشن متحدہ عرب امارات اور بحرین کے درمیان خلائی سائنس، ٹیکنالوجی اور انجینئرنگ کے شعبوں میں تعاون کے ایک اہم سنگ میل ہے ۔ لائٹ-1 فالکن 9 راکٹ پر اسپیس ایکس CRS-24 فلائٹ پر تھرمل، وائبریشن اورکمیونیکیشن سسٹم کے لیے ماحولیاتی ٹیسٹ سے گزرنے کے بعد اڑان بھرے گا اورپھر جاپانی ایرو اسپیس ایجنسی (JAXA) کی نگرانی میں ISS میں جاپانی تجرباتی ماڈیول (KIBO) سے مدار میں تعینات کیا جائے گا۔ نینو سیٹلائٹ کو متحدہ عرب امارات کی خلائی ایجنسی اور بحرین کی نیشنل اسپیس سائنس ایجنسی (این ایس ایس اے) کے اشتراک سے بنایا گیا ہے۔ یہ بحرین اور متحدہ عرب امارات کے درمیان دوطرفہ تعلقات کا ثبوت ہے جو دونوں ممالک کے درمیان ترجیحی صنعتوں بشمول خلا میں سماجی، اقتصادی اور سائنسی تعاون پر زور دیتا ہے۔ لائٹ-1 ایک نینو سیٹلائٹ ہے لیکن اسے بنانے یا لانچ کرنے کے لیے درکار ٹیکنالوجی اور تکنیکی مہارت دوسرے بڑے سیٹلائٹ سے مختلف نہیں ہے۔ یہ ایک کیوب سیٹلائٹ بھی ہے جو تین اکائیوں پر مشتمل ہے اور اسے اکثر 3Uکیوب سیٹ کہا جاتا ہے۔ Light-1 کا نام بحرین کے حمد بن عیسیٰ الخلیفہ کی کتاب (The First Light) سے متاثر ہو کر رکھا گیاہے۔یہ بحرین کی تاریخ کے اہم نکات کو بیان کرتا ہے ۔ یہ نام ملکی اور سائنسی ترقی کی علامت ہے۔ تحقیقی خلائی راکٹ متحدہ عرب امارات کی لیبارٹریوں میں کام کرنے والے بحرین اور اماراتی انجینئروں اور سائنسدانوں نے تیار کیا ہے۔ یہ ٹیم 23 طلباء پر مشتمل ہے جن میں خلیفہ یونیورسٹی اور نیویارک یونیورسٹی ابوظبی کے 9 بحرین اور 14 اماراتی طلباءشامل ہیں۔ زمین کے گرد اپنے مدار میں پہنچنے کے بعد Light-1 گرج چمک اور کمولس بادلوں سے زمینی گاما شعاعوں کی چمک (TGRs) کی نگرانی اور مطالعہ کرے گا۔ TRG تجزیہ جیو سائنسی تحقیق کا ایک ابھرتا ہوا شعبہ ہے جس میں یہ مشن بین الاقوامی سطح پر اپنا حصہ ڈالے گا۔ یہ خطے میں اپنی نوعیت کا پہلا تحقیقی مشن ہوگا اورنیویارک یونیورسٹی ابو ظبی اس مشن کے لیے سائنس ڈیٹا کے تجزیہ کی قیادت کرے گی۔ متحدہ عرب امارات کی خلائی ایجنسی اور بحرین کی نیشنل اسپیس سائنس ایجنسی کے درمیان مضبوط اور باہمی طور پر فائدہ مند شراکت داری بحرین انٹرنیشنل ایئر شو 2022 میں بھی نظر آئے گی۔ جس پر وزیر مملکت برائے اعلیٰ ٹیکنالوجی اور متحدہ عرب امارات کی خلائی ایجنسی کی چیئر وومن اور انجینئر سارہ بنت یوسف العمیری اوربحرین کے نقل و حمل اور ٹیلی کمیونیکیشن کے وزیر اور دبئی ایئر شو 2021 میں NSSA کے چیئرمین کمال بن احمد محمد نے دستخط کیے ۔ ترجمہ ریاض خان http://wam.ae/en/details/1395303004612

WAM/Urdu