منگل 18 جنوری 2022 - 6:24:36 شام

متحدہ عرب امارات کی بحیرہ احمر میں اپنے پرچم بردار کارگو جہاز کے خلاف حوثیوں کی کارروائی کی مذمت


نیویارک، 13 جنوری، 2022 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات نے مشرق وسطی کی صورتحال پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس میں حوثیوں کی جانب سے بحیرہ احمر میں متحدہ عرب امارات کے پرچم بردار سویلین کارگو جہاز پر قبضے کو قزاقی کی کارروائی قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے۔ سویلین مال بردار جہازروابی کو 3 جنوری کو حوثیوں نے اپنے قبضے میں لے لیا تھا۔ اجلاس میں سلامتی کونسل کے کئی رکن ممالک نے بھی جہاز پر قبضے کی مذمت کی۔ متعدد ممالک اور اداروں نے حوثیوں کے جہاز کو قبضے میں لینے کی مذمت کرتے ہوئے اس حوالے سے بیانات جاری کیے ہیں۔ اقوام متحدہ میں متحدہ عرب امارات کی مستقل سفیر لانا نسيبة نے کہا کہ ہم حدیدہ کی بندرگاہ کے قریب سویلین کارگو جہاز روابی کے خلاف بحری قزاقی کی حوثیوں کی اس کارروائی کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہیں،یہ بحیرہ احمر میں جہازرانی کی حفاظت کے خلاف ایک خطرناک اضافہ ہے۔ اس حوالے سے سلامتی کونسل کی جانب سے ایک مضبوط موقف اختیار کرنے کی ضرورت ہے۔ ہم ان تمام ممالک کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے بحری قزاقی کی کارروائی کی مذمت کرتے ہوئے بیانات جاری کیے ہیں۔ سفیر نسيبة نے اس بات پر زور دیا کہ یمن میں بحران کے خاتمے میں پیش رفت اس وقت تک ممکن نہیں ہو گی جب تک حوثی ملیشیا یمنی عوام کے خلاف اپنے دشمنی پر مبنی رویہ اور بار بار کی خلاف ورزیاں بند نہیں کر دیتے۔ انہوں نے حوثیوں کی جانب سے ڈرونز اور بیلسٹک میزائلوں کے ذریعے سعودی عرب کی سرزمین کو نشانہ بنانے کی کوشش کی بھی شدید مذمت کی جو کہ بین الاقوامی قانون کی صریح خلاف ورزی ہے۔ سفیر نسيبة نے یمن کے عوام کے لیے ایک اتفاق رائے تک پہنچنے، ریاض معاہدے کے مطابق یمنی عوام کو متحد کرنے اور یمن کے قومی مفاد کو ترجیح دینے کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے معیشت کو بہتر بنانے کے لیے یمن حکومت کی حالیہ کوششوں کا بھی خیر مقدم کیا اور کہا کہ متحدہ عرب امارات ایسے حل تیار کرنے کا منتظر ہے جو معیشت کی ترقی میں معاون ہوں۔ نسيبة نے یمنی عوام کی انسانی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے بین الاقوامی کوششوں کو تیز کرنے پر بھی زور دیا۔ ترجمہ۔تنویر ملک https://wam.ae/en/details/1395303010633

WAM/Urdu