اتوار 22 مئی 2022 - 5:48:53 شام

حوثی ملیشیا کے صعدہ میں ایک حراستی مرکز پرحملے کے الزامات غلط ہیں:المالکی


ریاض، 22 جنوری، 2022 (وام) ۔۔ یمن میں اتحادی افواج کی مشترکہ کمان نے سے دہشت گرد حوثی ملیشیا کے یمن کے صوبے صعدہ میں اتحا دکی جانب سے ایک حراستی مرکز کو نشانہ بنانے کے الزامات کی تردید کی ہے۔ سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کی طرف سے جاری ایک بیان میں، اتحادی افواج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل ترکی المالکی نے کہا کہ دہشت گرد حوثی ملیشیا کے اتحادی افواج کی جانب سے جمعہ کی صبح صعدہ میں ایک حراستی مرکز کو نشانہ بنانے اور اس میں قیدیوں کے مارے جانے کے دعوی کے بعد جوائنٹ فورسز نے میڈیا میں آنے والی خبروں کی تحقیقات کیں۔ المالکی نے بتایا کہ مشترکہ افواج کی کمان کے داخلی طریقہ کار کے تحت پوسٹ ایکشن پروسیجر (اے اے آر) کا جامع جائزہ لیا گیا جس میں یہ الزامات غلط ثابت ہوئے اور یہ کہ جوائنٹ فورسز ایسی رپورٹس کا سنجیدہ نوٹس لیتی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ میڈیا رپورٹس دہشت گرد حوثی ملیشیا کی طرف سے پھیلائی گئی تھیں،جو اس کے معمول کے گمراہ کن انداز کی عکاسی ہے کیونکہ یمن میں امدادی امور کے رابطہ دفتر(او سی ایچ اے) کی جانب سے منظور کردہ طریقہ کار کے مطابق مبینہ ہدف نو اسٹرائیک لسٹ (این ایس ایل) میں شامل نہیں تھا۔ المالکی نے مزید کہا کہ مبینہ ہدف کی اطلاع انٹرنیشنل کمیٹی آف ریڈ کراس (آئی سی آر سی) کی جانب سے نہیں دی گئی تھی، اور یہ بین الاقوامی انسانی قانون کی شرائط میں بیان کردہ معیارات پر لاگو نہیں ہوتا ۔ بریگیڈیئر جنرل المالکی نے کہا کہ مبینہ ہدف اور مقام کے بارے میں حقائق اور حوثی میڈیا کی غلط معلومات کی تفصیلات ظاہرکی جائیں گے اور او سی ایچ اے اور آئی سی آر سی کو ان سے متعلق آگاہ کیا جائے گا۔ ترجمہ۔تنویر ملک https://wam.ae/en/details/1395303013768

WAM/Urdu