جمعہ 01 جولائی 2022 - 8:38:52 شام

یورپی یونین  اور خلیج تعاون کونسل کی سریٹجک پارٹنرشپ کے اعلامیے کی منظوری                                                      


برسلز، 18 مئی، 2022 ۔۔ یورپی کمیشن نے خلیج تعاون کونسل (GCC) اور اس کے رکن ممالک کے ساتھ یورپی یونین کے تعاون کو وسیع اور گہرا کرنے کے مقصد سے"خلیج کے ساتھ اسٹریٹجک پارٹنرشپ" کے مشترکہ اعلامیے کی منظوری دے دی ہے۔ اس تناظر میں یورپی یونین کے اعلیٰ نمائندے/نائب صدر نے ایک بیان میں کہا ہےکہ خلیج اور مشرق وسطیٰ میں استحکام اور عالمی سلامتی کے خطرات توانائی کی حفاظت، موسمیاتی تبدیلی اور گرین ٹرانزیشن، ڈیجیٹلائزیشن، تجارت اور سرمایہ کاری پر مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں طلباء، محققین، کاروباری اداروں اور شہریوں کے درمیان رابطے مضبوط کرنے کی بھی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یورپی یونین دنیا کی سب سے بڑی سنگل مارکیٹ اور تحقیق و اختراع میں رہنما ہے اور اسکے ساتھ مضبوط شراکت داری یورپی یونین اور خلیجی شراکت داروں دونوں کے لیے فائدہ مند ہے ۔تبدیلی اور ڈیجیٹلائزیشن EU گلوبل گیٹ وے مشرق وسطیٰ کے وسیع تر خطے کے ساتھ ساتھ افریقہ میں پائیدار سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے GCC شراکت داروں کے ساتھ تعاون کے لیے ایک متحرک فریم ورک فراہم کرتا ہے۔

GCC ممالک متحرک معیشتیں ہیں اور یورپ، ایشیا اور افریقہ کے درمیان ایک اہم گیٹ وے ہیں۔ یہ قابل اعتماد مائع قدرتی گیس فراہم کرنے والے ہیں اور ان کے پاس دنیا کے بہترین شمسی اور ہوا کے وسائل ہیں جن کی ترقی آب و ہوا کے وعدوں کے ساتھ ساتھ اقتصادی اہداف کو پورا کرنے کے لیے باہمی حکمت عملیوں کو نافذ کرنے میں کلیدی حیثیت رکھتی ہے۔

انسانی حقوق اور صنفی مساوات سمیت کثیرالجہتی اور سماجی تبدیلی کے مضبوط محافظ کے طور پریورپی یونین خلیجی ممالک کے ساتھ ایسے معاملات پر سیاسی بات چیت کو فروغ دینا جاری رکھے گی۔

یورپی یونین اور جی سی سی ممالک کے درمیان بڑھتا ہوا تعاون اور تبادلے بالآخر دونوں خطوں کے لوگوں کے لیے بھی فائدہ مند ثابت ہوں گے۔ قریبی بین الثقافتی تعاون، نوجوانوں اور طلباء کی نقل و حرکت، اعلیٰ تعلیمی تعاون اور تبادلے باہمی افہام و تفہیم اور اعتماد کو بہتر بنائیں گے۔ مشترکہ اعلامیے میں توانائی، گرین انرجی پر منتقلی اور موسمیاتی تبدیلی، تجارت اور اقتصادی تنوع، علاقائی استحکام اور عالمی سلامتی، انسانی اور ترقیاتی چیلنجز اور لوگوں کے قریب ہونے پر یورپی یونین اور خلیج تعاون کونسل تعاون کو مضبوط بنانے کے لیے ٹھوس تجاویز پیش کی گئی ہیں۔

موسمیاتی تبدیلیوں سے نمٹنے اور گرین ٹرانزیشن کے ذریعے فراہم کردہ مواقع سے فائدہ اٹھانے کے لیے ملکر کام کرنا انتہائی اہم اور باہمی طور پر فائدہ مند ہے۔

خلیجی خطہ خاص طور پر موسمیاتی تبدیلیوں سے متاثر ہے اور یورپی یونین جو کہ موسمیاتی تبدیلی کے لیے اقدامات کا علمبردار ہے اس چیلنج سے نمٹنے کے لیے علم اور مہارت کو فروغ دینے میں شراکت دار ہو سکتا ہے۔ ایک کثیر جہتی اور قواعد پر مبنی بین الاقوامی آرڈر کے لیے باہمی سلامتی اور وسیع یورپی پڑوس اور خلیج کے استحکام کو بڑھانے کے لیے تعاون کی ضرورت ہوتی ہے۔

طویل تنازعات کے حالات میں وسیع تر مشرق وسطیٰ اور ہارن آف افریقہ میں بے مثال انسانی اور ترقیاتی ضروریات کو پورا کرنے کے لیے مزید اسٹریٹجک اور بہتر رابطوں کی ضرورت ہوتی ہے۔ خلیجی ممالک دو طرفہ مالی امداد کے اہم عطیہ دہندگان ہیں اور بین الاقوامی انسانی قانون اور انسانی ہمدردی کے اصولوں کے احترام کے فروغ میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔

لوگوں کے درمیان قریبی رابطوں، نوجوانوں اور طلباء کی نقل و حرکت، بین الثقافتی اور اعلیٰ تعلیمی تعاون کو بڑھانے کے پیش نظر GCC ممالک کے لیے ویزا فری سفر کا حصول یورپی یونین اور GCC ممالک کے لیے مشترکہ مفاد اور مقصد ہے۔

ترجمہ: ریاض خان ۔

http://wam.ae/en/details/1395303048659

WAM/Urdu