جمعرات 07 جولائی 2022 - 2:25:55 شام

ورلڈ اکنامک فورم کا کمزورکمیونٹیزکے لیے نجی سرمایہ اکٹھا کرنے کے لیے نئی شراکت داریوں کا مطالبہ


ڈیووس، 24 مئی، 2022 (وام) ۔۔ ورلڈ اکنامک فورم نے ایک مقالہ جاری کیا جس میں امدادی اور ترقیاتی تنظیموں، کاروباری اداروں، سرمایہ کاروں اور کاروباری افراد کے درمیان نئے تعاون پر زور دیا گیا ہے تاکہ دنیا میں کمزورحالات اور تنازعات سے متاثرہ علاقوں میں رہنے والے تقریباً 1 ارب لوگوں کی زندگیوں میں تبدیلی لائی جاسکے۔

کمزور سیاق و سباق میں سرمایہ کاری کے مواقع پیدا کرنا: کمیونٹی اور معیشت کی مضبوطی کے مارکیٹ پر مبنی ذرائع کو متحرک کرنا ایک عملی نقطہ نظر کا خاکہ پیش کرتا ہے کہ کس طرح ادارے ایسے حل کے لیے پائیدار کاروباری کیس تیار کرنے کے لیے درکار صلاحیت اور تزویراتی سوچ تیار کر سکتے ہیں جو نئے ذرائع کو کھولنے کی صلاحیت کے حامل ہوں۔

ورلڈ اکنامک فورم کے صدربورج برینڈے کا کہنا ہے کہ پیچیدہ ماحولیاتی نظام میں تبدیلی کے لیے ایک سے زیادہ عملی اقدام اٹھانے کی ضرورت ہے۔سرمایہ کاروں کے منافع کی طلب کو پورا کرتے ہوئے مثبت اور پائیدار سماجی اثرات کے امکانات سے فائدہ اٹھانے کے لیے، تمام شعبوں میں تعاون کے نئے طریقوں کی ضرورت ہے۔ آئی کے ای اے فاؤنڈیشن اس اقدام کی شراکت دار ہے۔جس کے تحت اگلے تین سالوں میں شراکت داری جدید کاروباری ماڈلزاورسرمایہ کاری تیار کرے گی جو مقامی معیشتوں کو مضبوط اور سب سے زیادہ کمزور کمیونٹیزاور معیشتوں کی خود انحصاری اور استحکام میں اضافہ کریں گے۔

آئی کے ای اے فاؤنڈیشن کے سی ای اوپر ہیگنزنے کہا کہ بحرانوں سے متاثرہ افراد بشمول گھر چھوڑنے پرمجبورلوگوں کی زندگیوں کو بہتر بنانے کے باہمی مقصد کی وجہ سے ہم عالمی اقتصادی فورم کی حمایت کرتے ہیں ۔

ہم سمجھتے ہیں کہ مل کر ہم سرمایہ کاری کو راغب کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔ کمزور کمیونٹیز کو مضبوط کرنے اور ان میں رہنے والے لوگوں کو اپنی زندگیوں کی تعمیر نو اور بچوں اور ان کے خاندانوں کا بہتر مستقبل بنانے کے لیے بااختیار بنانے کی ضرورت ہے۔

مشترکہ بحث کا مقالہ فورم کے ہیومینٹیرین اینڈ ریسیلینس انویسٹنگ (ایچ آرآئی) انیشیٹو کے تحت شروع کردہ کوششوں کا ارتقاء ہے جو سوئٹزرلینڈ کےشہر ڈیووس -

کلوسٹرز میں ورلڈ اکنامک فورم کے سالانہ اجلاس 2019 میں شروع کیا گیا تھا۔ پہلے قدم کے طور پر یہ اقدام 2020 میں شروع کردہ آرگنائزیشنل ریڈینس پلے بک کو فعال کرتے ہوئے ایچ آرآئی کے لیے تنظیمی صلاحیت کو بڑھانے کے لیے امدادی اور ترقیاتی تنظیموں، عطیہ دینے والے ممالک اور ترقیاتی مالیاتی اداروں کے علمبرداروں کو اکٹھا کرے گا۔

یہ اقدام سرمایہ کاری مواقع کو بھی سپورٹ کرے گا جس میں ایچ آر آئی کو سرمایہ کاروں کے معیار کو پورا کرنےاور معیار تک پہنچنے کے لیے درکار تجارتی سرمائے کو راغب کرنے کے لئے اہداف دئے جائیں گے۔یہ اقدام نئے آلات، تحقیق اور وسائل کی ترقی میں مزید سہولت فراہم کرے گا۔

ترجمہ۔تنویرملک

http://wam.ae/en/details/1395303050666

WAM/Urdu