ابوظہبی بزنس فورم میں متحدہ عرب امارات،جاپان اقتصادی،تجارتی تعاون بڑھانےکا جائزہ

ابوظہبی بزنس فورم میں متحدہ عرب امارات،جاپان اقتصادی،تجارتی تعاون بڑھانےکا جائزہ

ٹوکیو، 14 مارچ، 2023(وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات اور جاپان نے ابوظہبی بزنس فورم کے اجلاس میں اقتصادی، تجارتی اور سرمایہ کاری کے تعاون کو بڑھانے کے امکانات اور مشترکہ دلچسپی کے نئے اقتصادی مواقع تلاش کرنے کا جائزہ لیا۔

اجلاس کا اہتمام ابوظہبی ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈویلپمنٹ نے گزشتہ روز ابوظہبی۔جاپان بزنس کونسل کے 9ویں اجلاس کے اختتام کے بعد کیا تھا جس میں متحدہ عرب امارات اور جاپانی سرکاری اور نجی کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ابو ظہبی ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈویلپمنٹ کے چیئرمین احمد جاسم الزابی نے کہا کہ ابو ظہبی نئے کاروباروں اور کاروباری افراد کی فعال طور پر مدد کرنے اور غیر تیل کے جی ڈی پی کی شرح کو بڑھانے کے مقصد کے ساتھ ان میں اضافہ کرنے کیلئے پرعزم ہے۔

انہوں نے جاپانی کمپنیوں پر زور دیا کہ وہ ابوظہبی میں حاصل ہونے والے بے شمار مواقع سے استفادہ کریں اور مشرق وسطیٰ، افریقہ اور جنوبی ایشیا کے لیے گیٹ وے کے طور پر متحدہ عرب امارات کی پوزیشن سے استفادہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ جاپان، ابوظہبی کے ممتاز تجارتی اور سرمایہ کاری کے شراکت داروں میں سے ایک ہونے کی وجہ سے ہمیں بات کرنے کے لیے بہت کچھ فراہم کرتا ہے کیونکہ باہمی ترقی، ترقی اور پیشرفت کے امکانات لامتناہی اور پرجوش ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دونوں ملک شناخت اور تخلیق پر توجہ مرکوز کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ابو ظہبی کا محکمہ اقتصادی ترقی چند دیگر ممتاز اداروں کے ساتھ مل کر کام کرتا ہے اور ابوظہبی ماحولیاتی نظام کو تشکیل دیتا ہے۔ متحدہ عرب امارات کا دارالحکومت اور اس سے متعلقہ علاقوں پر توجہ مرکوز کی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ابوظبی سٹریٹجک کاروباروں کو سہولت فراہم کرنے، حوصلہ افزائی کرنے اور سمارٹ مدد اور فنڈنگ فراہم کرنے اور اسٹارٹ اپس اور کاروباری افراد کو فعال طور پر سپورٹ کرنے اور غیر تیل جی ڈی پی کے فیصد کو بڑھانے کے مقصد کے ساتھ ان کی پیمائش کرنے پر توجہ دے رہا ہے۔

الزابی نے کہا کہ ابوظہبی انوسٹمنٹ آفس انوویشن پروگرام کو نافذکر رہا ہے، مراعات فراہم کر رہا ہے اور کمپنیوں کو آسانی سے یہاں منتقل ہونے میں مدد کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ صنعتی ترقی کا بیورو مینوفیکچررز کے ساتھ مل کر کام کرتا ہے تاکہ انہیں مزید ترقی دینے اور ان کی پیداوار کی سطح کو بڑھانے میں مدد ملے۔

انکا کہنا تھا کہ یہ مالی اور غیر مالیاتی مراعات کے پروگراموں اور اقدامات کا ایک سیٹ فراہم کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جاپان میں کمپنیوں کی کل تعداد میں سے 90% چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباری ادارے ہیں جو بہت فعال ہیں اور ہمیشہ اپنے جغرافیائی نقشوں کو بڑھانے کے لیے کوشاں رہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں ان اختراعی کمپنیوں سے کہتا ہوں کہ ابوظہبی کو مشرق وسطیٰ کے لیے اپنا گیٹ وے سمجھتے ہیں۔

الزابی نے ان مواقع پر زور دیا جو متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت میں تمام کاروباروں کے لیے دستیاب ہیں خاص طور پر وہ مواقع جن میں ابوظہبی کو مسابقتی فائدہ حاصل ہے اور وہ عالمی اثرات کے لیے جدت لانے میں مدد کر سکتے ہیں۔

ان میں چند ایک مندرجہ زیل ہیں۔

-بین الاقوامی تجارت

-سرمایہ دار صنعتیں، جیسے دواسازی اور لائف سائنسز

-ٹیکنالوجی لاجسٹک اور صنعت

-سیاحت

-ایگری ٹیک

-صحت کی خدمات اور بائیو فارما

- فنانس، سرمایہ کاری اور اثاثہ جات کا انتظام

ابو ظہبی ڈیپارٹمنٹ آف اکنامک ڈویلپمنٹ کے چیئرمین احمد جاسم الزابی نے کہا کہ ادارے کو اس بات پر فخر ہے کہ ہم نے کس طرح سرمایہ کاروں اور تاجروں کے لیے مارکیٹیں کھولنے کا انتظام کیا ہے، جس سے "کاروبار کرنے میں آسانی کے اصول" کی سہولت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم آزاد اور کھلے اقتصادی، کاروباری اور تجارتی ماڈل کو یقینی بنائیں گے اور اپنی معیشت اور اس کی منفرد صفات پر اعتماد کو دوبارہ نافذ کریں گے۔

مشرق وسطیٰ کے لیے جاپان کوآپریشن سینٹر کے صدر نوبیوری کوڈیرا نے کہا کہ یہ ملاقات ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب جاپان اور متحدہ عرب امارات مختلف شعبوں میں اقتصادی تعاون کی نئی نصف صدی شروع کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ توانائی کی منتقلی اور اقتصادی تنوع دونوں فریقوں کے درمیان تعاون میں اضافے کے نئے مواقع فراہم کرتا ہے۔ ابوظہبی بزنس فورم میں جاپان میں متحدہ عرب امارات کے سفیر شہاب احمد الفہیم اور ابوظہبی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے چیئرمین عبداللہ المزروئی سمیت دونوں اطراف کے اعلیٰ عہدیداروں نے بھی شرکت کی۔

ترجمہ: ریاض خان ۔

https://wam.ae/en/details/1395303138932