G77+چین COP28 کی کامیابی میں کردار ادا کرنا چاہتے ہیں: کیوبن سفیر

G77+چین COP28 کی کامیابی میں کردار ادا کرنا چاہتے ہیں: کیوبن سفیر

ابوظبی،17ستمبر، 2023 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات میں کیوبا کے سفیر نوربرٹو کارلوس ایسکالونا کیریلو نے متحدہ عرب امارات کی کوششوں کو سراہتے ہوئے کہا ہےکہ COP ہمیں درپیش آب و ہوا کے بحران کے لیے ٹھوس اور قابل پیمائش اقدامات کی بنیاد پر حقیقی حل فراہم کرتا ہے۔ امارات نیوز ایجنسی (وام) کو اپنے بیان میں سفیر کیریلو نے کہا کہ منتظمین کی طرف سے جس وژن کا اظہار کیا گیا ہے وہ اس بات کے حوالے سے واضح ہے کہ وہ اقتصادی ماڈل، کم کاربن اور زیادہ ترقی کی معیشت کے ساتھ، تبدیلی اور منصفانہ انداز میں COP28 کی کامیابی کے لیے اتحاد اور بین الاقوامی تعاون کو اہمیت دیتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ COP28 ایکشن ایجنڈا زندگی اور معاش کو بہتر بنانے کے لیے عملی حل میں سرمایہ کاری کر کے موافقت، ماحولیاتی نظام کے تحفظ، آب و ہوا کے لیے لچکدار خوراک کے نظام، اور سب سے زیادہ کمزور طبقوں کے تحفظ اور ان کو بااختیار بنانے کے لیے باہمی تعاون کو متحرک کرنے کی کوشش کرتا ہے۔ سفیر کیریلو نے کہا کہ کیوبا نے گروپ آف 77 اور چین (G77+China) کی عارضی صدارت سنبھال لی ہے جو کہ متعدد اور متعلقہ کثیرالجہتی عمل میں گروپ کے اتحاد، موجودگی اور اثر و رسوخ کو مستحکم کرنے کے اس عزم کی عکاسی کرتا ہے۔ G77+چین کی صدارت کے طور پر کیوبا نے "موجودہ ترقی کے چیلنج: سائنس، ٹیکنالوجی اور اختراع کا کردار" کے موضوع کے تحت 15 اور 16 ستمبر کو ہوانا میں گروپ کے سربراہان مملکت اور حکومت کا سربراہی اجلاس بلایا ہے۔ سفیر کیریلو نے اس بات پر زور دیا کہ انکے ملک نے 2023 میں ان میں سے ہر ایک پر بین الاقوامی کانفرنسوں کے دوران تعلیم، ثقافت، سیاحت اور ماحولیات کے شعبوں میں G77+چین کے اجلاس بلائے اور منعقد کیے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اجلاسوں نے ہمیں مشترکہ مفاد کے پہلوؤں پر تبادلہ خیال کرنے، مشترکہ چیلنجوں کی نشاندہی کرنے اور ان کا مقابلہ کرنے کے لیے اقدامات تجویز کرنے کی اجازت دی اورگروپ کے اراکین کے درمیان مربوط کارروائی اور تعاون کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ اپنے مینڈیٹ کے دوران کیوبا نے رکن ممالک کے درمیان طب، تعلیم، بائیوٹیکنالوجی اور موسمیاتی تبدیلی کے شعبوں میں تعاون کے منصوبوں کو فروغ دیا۔ سفیر کیریلو نے کہا کہ G77+چین کی کیوبا کی عارضی صدارت کی سب سے اہم کارروائیوں میں سے ایک سربراہان مملکت اور حکومت کا سربراہی اجلاس ہےجسے کیوبا کے صدر میگوئل ڈیاز کینیل برموڈیز نے 15 اور16 ستمبر 2023 کو ہوانا میں بلایا تھا۔ سربراہی اجلاس کا ایجنڈا سربراہان مملکت اوریا حکومت کو ترقی کے چیلنجوں کا جواب دینے کے لیے علم کے استعمال اور سائنس، ٹیکنالوجی اور اختراع کی ترقی سے منسلک موجودہ مسائل کے سلسلے میں اپنے نقطہ نظر کا اظہار کرنا تھا۔ سفیر کیریلو نے سمٹ میں متحدہ عرب امارات کی شرکت کوسراہا ۔ متحدہ عرب امارات کے وفد کی قیادت موسمیاتی تبدیلی اور ماحولیات کی وزیر مریم المہیری نے کی۔ سفیر کیریلو نے وضاحت کی کہ COP28 کی صدارت اور G77+چین کی صدارت ماحولیاتی مسائل میں درپیش چیلنجوں اور خواہشات کے بارے میں ایک مشترکہ وژن کے ساتھ ساتھ ایسے فوری اقدامات کرنے کی ضرورت ہے جو بین الاقوامی تعاون کی بنیاد پر پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن ہوں۔ گلوبل ساؤتھ کے ممالک کے ساتھ سب سے زیادہ مطابقت کے پہلوؤں پر اتفاق رائے حاصل کرنے کی اہمیت پر غور کرتے ہوئےانہوں نے کہا کہ کیوبا نے COP28 کے فریم ورک کے اندر G77+ چین کے رہنماؤں کی میٹنگ منعقد کرنے کی تجویز پیش کی اس طرح وہ ایک سربراہی اجلاس کی میزبانی کرنے والا پہلا COP بن گیا۔ کیوبن سفیر نے کہا کہ کہ یہ ہمارے مفاد میں ہے کہ جی 77+چین کے ایسے معاملات پر ایک ٹھوس پوزیشن کو مضبوط کیا جائے جہاں اتفاق رائے ہو اور COP28 کی کامیاب ترقی میں اپنا حصہ ڈالیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ https://www.wam.ae/en/details/1395303197802